3.10.2020

قبر کے اوپر بیٹھنا یا چلنا کیسا ہے؟؟ ؟

                 السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

کیا فرماتے ہیں علماٸے کرام و مفتیان کرام اس مسٸلہ کے بارے میں کہ قبروں کے اوپر بیٹھنا کیسا ہے؟ مکمل طور پر جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی

الســــاٸل محمد نواز علی ساکن دسولی ضلح فتح پور الھند
...........................................۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
             وعلیکم السلام ورحمة الله وبركاته 

                  الجواب بعون المک الوہاب

 صاحب کنز الایمان حضور اعلی حضرت علیہ الرحمہ فتاوی رضویہ میں تحریر فرماتے ہیں:  قبور مسلمین پر چلنا جائز نہیں، بیٹھنا جائز نہیں، ان پر پاؤں رکھنا جائز نہیں، یہاں تک کہ ائمہ نے تصریح فرمائی ہے کہ قبرستان میں جو نیا راستہ پیدا ہو اس میں چلنا حرام ہے۔ اور جن کے اقربا ایسی جگہ دفن ہوں کہ ان کے گرد اور قبریں ہوگئیں اور اسے ان قبور تک اور قبروں پر پاؤ ں رکھے بغیر جانا ممکن نہ ہو، دور ہی سے فاتحہ پڑھے اور پاس نہ جائے _ (فتاوی رضویہ، ج 9، ص 481_{رضا فاؤنڈیشن لاہور}

          واللہ تعالیٰ اعلم باالــــــصـــــواب 

کتبـــــــــــــــــــــــــہ محمـــد معصـوم رضا نوری عفی عنہ
منگلور کرناٹک انڈیا) ١٤ رجب المرجب ١٤٤١؁ھ_

            اســـلامی مـــعلــومـات گـــــروپ 
  1. قبرستان کہ نزدیک مسجد ہے اور مسجد کے لیے سیڑھی بنانے کی ضرورت ہے لیکن بیچ میں قبر ہے تو کیا قبر سے اوپر سیڑھی بنا سکتے ہیں

    جواب دیںحذف کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only