4.01.2020

بسم اللہ شریف کب پڑھنا فرض ہے؟؟؟

               اَلسَلامُ عَلَيْكُم وَرَحْمَةُ اَللهِ وبرکاتہ 

کیا فرماتے ہیں علمائے کرام ومفتیان عظام اس مسئلہ کے بارے میں کہ بسم اللہ شریف کب پڑھنا فرض ہے برائے مہربانی مکمل طور پر جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی 

       سائل حافظ اعجاز احمد نظامی گورکھپور
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
            وَعَلَيْكُم السَّلَام وَرَحْمَةُ اَللهِ وَبَرَكاتُهُ‎

                 الجواب بعون الملک الوہاب 
صورة مسٶلہ میں جانور ذبح کرتے وقت بسم اللہ پڑھنا فرض ہےاگرچہ پوری بسم اللہ پڑھنا فرض نہیں جیسا کہ طحطاوی علی مراقی الفلاح صفحہ2 میں ہےاماالاتیان بالبسملة فتارة یکون فرضاکماعندالذبح وان کان لایشترط ھذااللفظ بتمامہ بل لایسن وانماالمنقول باسم اللہ اللہ اکبرعجائب الفقہ فقہی پہلیاں صفحہ 55(خلاصہ ذابح کسی حلال جانور کو ذبح کرے تو اس وقت بسم اللہ تک پڑھنا فرض ہے آگے پڑھنا فرض نہیں 

                  واللہ تعالیٰ اعلم باالصواب 

عبیداللہ بریلوی خادم التدریس مدرسہ دارارقم محمدیہ میرگنج بریلی شریف یوپی

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only