12.12.2020

کیا مرا ہوا بکرا کافر کو دے سکتے ہیں

 


السلام علیکم ورحمۃاللہ وبرکاتہ


کیافرماتے ہیں علمائے کرام مسئلہ ذیل میں زید نے ایک بکرا پال رکھا تھا قربانی کے لیے وہ بکرا قربانی سے پہلے مر گیا تو کیا اس مرے ہوۓ بکرے کو کافروں کو دے سکتے ہیں کھانے کو یا نہیں بحوالہ جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی 


المستفتی محمد حسان رضوی حیدرآباد

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

وعلیکم السلام و رحمۃاللہ وبرکاتہ


الجواب بعون الملک الوھاب 


کافر کو مردار بلا معاوضہ دینے کی اجازت نہیں ہے بلکہ معاوضہ لے کر بیچنے میں کوئی حرج نہیں جیسا کہ حضور فقیہ ملت مفتی جلال الدین امجدی علیہ الرحمۃ ایک سوال کے جواب میں ردالمحتار کے حوالے سے تحریر فرماتے ہیں کہ اس ملک کے کافروں کے ہاتھ مردار کا گوشت بیچنا جائز ہے (فتاوی فیض الرسول جلد دوم صفحہ 473) مذکورہ بالا عبارت سے معلوم ہوا کہ کافر کو مردار بلا معاوضہ نہیں دےسکتے ہیں۔ 

 

واللہ تعالیٰ اعلم باالصواب


العبد محمد عمران قادری تنویری عفی عنہ 19 ربیع الثانی 1442//7 دسمبر 2020

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

Whatsapp Button works on Mobile Device only