جس کمرے میں قرآن مجید رکھا ہو اس کمرے میں صحبت کرنا کیسا ہے





           السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

 مفتیان کرام اس مسئلہ حل فرمائیں ایک کمرے میں قرآن شریف رکھا ہوا ہو اور اس کمرے میں شوہر اور بیوی صحبت کر سکتے ہیں ؟ اس سوال کا حل فرمائے مہربانی ہوگی ۔

        سائل : محمد قمر الزماں گورکھپور
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔...........................
          وعلیکم السلام و رحمۃ اللّٰہ و برکاتہ

                 الجواب بعون المک الوہاب 

جس کمرے میں قرآن مجید رکھا ہو اس میں اپنی بیوی سے صحبت کرنا جائز ہے جبکہ وہ ڈھکا ہو جیسا کہ فتاوی عالمگیری میں ہے کہ " يجوز قربان المرأة فى بيت فيه مصحف مستور كذا فى القنية " اھ ( فتاوی عالمگیری ج 5 ص 322 : کتاب الکراهیة ، الباب الخامس فى آداب المسجد الخ ) اور بہار شریعت میں ہے کہ " جس گھر میں قرآن مجید رکھا ہو، اس میں بی بی سے صحبت کرنا جائز ہے جبکہ قرآن مجید پر پردہ پڑا ہو " اھ ( بہار شریعت ج 3 ص 496 : قرآن مجید اور کتابوں کے آداب ) 

               واللہ تعالیٰ اعلم باالــــــصـــــواب 

                     کتبـــــــــــــــــــــــــہ                   

کریم اللہ رضوی خادم التدریس دار العلوم مخدومیہ اوشیورہ برج جوگیشوری ممبئی موبائل نمبر 766645631

              اســـلامی مـــعلــومـات گـــــروپ 

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے