بغیر ختنہ کے نکاح کرنا کیسا ہے



            السلام وعلیکم ورحمتہ اللہ وبرکتہ 

 کیا فرماتے ہیں علماٸے کرام و مفتیان کرام اس مسٸلہ کے بارے میں کہ ختنہ کئے بغیر نکاح ہوجائے گا یا نہیں برائے کرم جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی

              المستفتی محمد یونس خان


          وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

             الجواب بعون الملک الوہاب 

ختنہ کرناسنت ہے اوریہ شعاراسلام میں ہے کہ مسلم اورغیرمسلم میں اس سےامتیازہوتاہے عرف میں اس کومسلمانی بھی کہتےہیں 

اگرکوئی بغیرختنہ کروائے نکاح کرےتونکاح ہوجائےگا اوراگرہوسکے توایسی لڑکی سےشادی کرےجوختنہ کرلیتی ہوبعد شادی اس سےختنہ کروالے اگریہ نہیں ہوسکتاتوکوئی ضرورت نہیں. جیساکہ سرکارصدرالشریعہ علیہ الرحمہ فرماتےہیں بوڑھا آدمی مشرف باسلام ہوا جس میں ختنہ کرانے کی طاقت نہیں تو ختنہ کرانے کی حاجت نہیں ۔ بالغ شخص مشرف با سلام ہوا، اگر وہ خود ہی اپنی مسلمانی کرسکتا ہے تو اپنے ہاتھ سے کرلے ورنہ نہیں ، ہاں اگر ممکن ہو کہ کوئی عورت جو ختنہ کرنا جانتی ہو، اس سے نکاح کرے، تو نکاح کرکے اس سے ختنہ کرالے۔ 

بہارشریعت حصہ شانزدہم ختنہ کابیان




                     واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب

             محمدافسررضاحشمتی سعدی عفی عنہ

                اســـلامی مـــعلــومـات گـــــروپ 

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے