4.05.2020

عمامہ کی وجہ سے پیشانی زمین سے نہ لگے تو کیا حکم ہے


             السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

آپ حضرات کے بارگاہ میں ایک سوال ہے کہاگر کوئی شخص عمامہ شریف باندھ کر نماز پڑھتا ہوںاور حالت سجدہ میں عمامہ کی وجہ سے پیشانی زمین سے نہ لگتا ہو تو اس کی نماز ہوگی یا نہیں؟ تشفی بخش جواب عنایت فرمائیں

سائل؛ محمد شفيق احمد رضوي بمقام ارریہ بہار (الهند)
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
        وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ تعالیٰ وبرکاتہ

                 الجواب بعون الملك الوھاب

نماز کا پانچواں فرض سجدہ ہے اور سجدہ میںپیشانی کا زمین پر جمنا سجدہ کی حقیقت ہے۔اور اگر پیشانی خوب نا جمے تو سجدہ نہیں ہوگا اور سجدہ نہ ہوا تونماز بھی نہ ہوگیجیسا کہ حضور صدر الشریعہ علیہ الرحمہ تحریر فرماتے ہیں کہ اگر پیشانی خوب نہ دبے تو نماز ہی نہ ہوئی اور آگے فرماتے ہیں کہ عمامہ کے پیچ پر سجدہ کیا اگر ماتھا خوب جم گیا سجدہ ہوگیا اور ماتھا نہ جما بلکہ فقط چھوگیا کہ دبانے سے دبے گا یا سر کا کوئی حصہ لگا تو نہ ہوا۔بہار شریعت جلد اول حصہ سوم صفحہ نمبر /60/61

                     واللہ اعلم باالصواب

کتبہ محمد الطاف حسین قادری خادم التدریس دارالعلوم غوث الورٰی ڈانگا لکھیم پور کھیری یوپی الھند موبائیل فون/9454675382

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only