کیا حضور ﷺ ہر جگہ حاضر و ناظر ہیں



             اَلسَلامُ عَلَيْكُم وَرَحْمَةُ اَللهِ وَبَرَكاتُهُ‎

کیا فرماتے ہیں علماٸے دین و مفتیانِ شرع متین اس مسٸلے کے بارے میں کہ کیا ہمارے نبی حضرت محمد مصطفےٰ ﷺ ہر جگہ حاضر و ناظر ہیں ؟اس بارے میںقرآن و حدیث کی روشنی میں مفصل جواب عنایت کریں۔


ساٸل ایم۔ کے۔ رضا صدیقی اسمٰعیلی متعلم دارالعلوم اھلِسنت والجماعت، ضیاٸے رضا الجامعة الاسمٰعیلیہ
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
          وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ ‌

               الجواب بعون المک الوہاب 

نبی اکرم ﷺ ہر جگہ حاضر وناظر ہیں اس بات پر تمام علماء کا اتفاق ہے جیسا کہ حضرت شیخ عبد الحق محدث دہلوی رحمۃ اللہ علیہ فرماتے ہیں باچندیں اختلافات وکثرت مذاھب کہ در علماۓ امت است یک کس را دریں مسلہ خلافے نیست کہ آنحضرت ﷺ بحقیقت حیات بے شائبہ مجاز وتوہم تاویل دائم و باقی اند بر اعمال امت حاضر و ناظر ترجمہ علمائے امت میں کثیر اختلافات کے بعد بھی سب اس مسلہ میں متفق ہیں کہ حضور ﷺ اپنی حیات حقیقی کے ساتھ امت کہ احوال پر حاضر و ناظر ہیں حضرت ملا علی قاری رحمۃ اللہ الباری ایک حدیث شریف کی تشریح میں فرماتے ہیں لان روح النبی صلی اللہ علیہ وسلم حاضرۃ فی یوت جمیع اہل الاسلام نبی پاک ﷺ کی روح تمام مسلمانوں کہ گھروں میں حاضر و ناظر ہے شرح شفا جلد ٢ صفحہ ٤٦٤ قدیم نسخہ 

               واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب 

             کتبہ امین قادری النعیمی رضوی

                اسلامی معلومات گروپ 

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے