ماں کافرہ ہو تو کیا اسکے ساتھ بھی حسن سلوک کرنا چاہیئے؟؟


              السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

کیا فرماتے ہیں علماء دین و مفتیان شرع متین: اگر ماں کافر ہے تو پھر بھی کیا بیٹے کو اچھا سلوک کرنا چاہیئے کہ نہیں براۓ مہربانی جواب عنایت فرمائیں مہربانی ہوگی

         الســــاٸل عبد الطیف قادری مہاراشٹر
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
            وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

               الجوابـــــ بعون الملکـــــ الوھاب 

 اللّٰه جل شانہ قرآن مجید میں ارشاد فرماتا ہے وَ قَضٰى رَبُّكَ اَلَّا تَعْبُدُوْۤا اِلَّاۤ اِیَّاهُ وَ بِالْوَالِدَیْنِ اِحْسَانًاؕ-اِمَّا یَبْلُغَنَّ عِنْدَكَ الْكِبَرَ اَحَدُهُمَاۤ اَوْ كِلٰهُمَا فَلَا تَقُلْ لَّهُمَاۤ اُفٍّ وَّ لَا تَنْهَرْهُمَا وَ قُلْ لَّهُمَا قَوْلًا كَرِیْمًا(۲۳) ترجمہ: کنزالایمان اور تمہارے رب نے حکم فرمایا کہ اس کے سوا کسی کو نہ پوجو اور ماں باپ کے ساتھ اچھا سلوک کرو اگر تیرے سامنے ان میں ایک یا دونوں بڑھاپے کو پہنچ جائیں تو ان سے ہُوں(اُف تک)نہ کہنا اور انہیں نہ جھڑکنا اور ان سے تعظیم کی بات کہنا.  حضرت ابوہریرہ رَضِیَ اللّٰہُ تَعَالٰی عَنْہُ سے روایت ہے، کہ ایک شخص نے عرض کی، یا رسولَ اللّٰہ! صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ، سب سے زیادہ حسنِ صحبت (یعنی احسان) کا مستحق کون ہے؟ ارشاد فرمایا: ’’تمہاری ماں (یعنی ماں کا حق سب سے زیادہ ہے۔) انہوں ے پوچھا، پھر کون؟ ارشاد فرمایا :’’تمہاری ماں ۔ انہوں نے پوچھا، پھر کون؟ حضورِ اقدس صَلَّی اللّٰہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ نے پھر ماں کو بتایا۔ انہوں نے پھر پوچھا کہ پھر کون؟ارشادفرمایا: تمہارا والد۔ ( بخاری، کتاب الادب، باب من احقّ الناس بحسن الصحبۃ، ۴ / ۹۳، الحدیث: ۵۹۷۱)چونکہ قرآن و احادیث نے مطلقاً کہا ہے نہ کہ یہ کہا ہے کہ ماں مومنہ ہو تو حسن سلوک سے پیش آؤ یا کافرہ ہو تو اسکے ساتھ حسن سلوک سے پیش نہ آوں بلکہ مطلقا ہے اس لیے ماں کیسی بھی خواہ مومنہ ہو یا کافر یا یہودیہ ہو یا نصرانیہ ہو جو بھی ہو ماں ماں ہوتی ہے اس کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آنے کا حکم ہےلہذا والدین کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آنا چاہیئےہاں اگر وہ شریعت کے معاملات میں دخل اندازی کرے تو اسکی بات نہیں مانی جائے گی یا نماز روزہ کی پابندی نہ کرنے دے یا فرض واجبات کو نہ ادا کرنے دے تو ایسی صورت میں ماں کی پیروی نہیں کی جائے گی اگر چہ وہ مومنہ کیوں نہ ہو

              واللہ تعالیٰ اعلم باالــــــصـــــواب

    کتبـــــــــــــــــــــــــہ ناچیز محمد شفیق رضا رضوی 

الجواب صحیح فقیر تاج محمد حنفی قادری واحدی ارشدی

            اســـلامی مـــعلــومـات گـــــروپ 

ایک تبصرہ شائع کریں

1 تبصرے

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ