3.10.2020

کیا جمعہ کے دن مرنے والا سوالات قبر سے محفوظ رہتا ہے


             السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ۔

کیا فرماتے ہیں علماٸے کرام و مفتیان کرام اس مسٸلہ کے بارے میں کہ اگر کسی شخص کا جمعہ کے دن انتقال ہو جائے کیا وہ عذاب قبر سے محفوظ رہتا ہے برائے مہربانی مکمل طور پر جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی 

           الســــاٸل عبد القادر رضوی مہاراشٹر 
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
         وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ تعالیٰ وبرکاتہ

                  الجواب بعون الملك الوھاب

جس شخص کا انتقال جمعہ کو  ہوا بے شک وہ سوالات قبر سے محفوظ رہتا ہے جیساکہ حضور سیدنا سرکار اعلیٰ حضرت امام احمد رضا خان محدث بریلوی علیہ الرحمہ تحریر فرماتے ہیں کہ جس شخص کا شب جمعہ اور رمضان المبارک میں انتقال ہوا وہ سوالات نکیرین وعذاب قبر سے محفوظ رہے گا{فتاوی رضویہ جلد چہارم صفحہ نمبر 124}{بستر علالت سے قبر تک صفحہ نمبر۔83} اور حضور صدر الشریعہ علیہ الرحمہ تحریر فرماتے ہیں کہ یہ حدیث شریف سے ثابت ہے کہ جو مسلمان شب جمعہ یا روز جمعہ یا رمضان المبارک میں کے کسی دن رات میں مرے گا سوال نکیرین وعذاب قبر سے محفوظ رہے گا {نبراس صفحہ نمبر 316بحوالہ۔ترمذی}. {بہار شریعت جلد اول حصہ اول صفحہ نمبر 26}
  
             واللہ اعلم تعالیٰ باالــــــصـــــواب 

     کتبـــــــــــــــــــــــــہ محمد الطاف حسین قادری 

             اســـلامی مـــعلــومـات گـــــروپ 
  1. السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
    کیا فرماتے ہیں علمائے کرام کہ رمضان المبارک و جمعہ کے دن انتقال کر نے والے سے صبح قیامت تک سوال نہ ہوگا۔

    جواب دیںحذف کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only