ہاف ٹی شرٹ پہن کر نماز ادا کرنا کیسا ہے


            السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

کیا فرماتے ہیں علماٸے کرام و مفتیان کرام اس مسٸلہ کے بارے میں کہ ہاف آستین کا کپڑا پہن کر نماز پڑھنا کیسا ہے دلیل کے ساتھ جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی

                الســــاٸل محمد شاحد رضا
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
           وَعَلَيْكُم السَّلَام وَرَحْمَةُ اَللهِ وَبَرَكاتُهُ‎

         الجـــــــــواب بــعــون الملکـــــ الوھاب ــ

 آدھی آستین والا کرتا یا قمیص پہن کر نماز پڑھنا مکروہ تنزیہی ہے جبکہ اس کے پاس دوسرے کپڑے موجود ہوں حضور صدرالشریعہ مفتی امجد علی اعظمی علیہ الرحمہ فرماتے ہیں جس کے پاس کپڑے موجود ہوں اور صرف نیم آستین یعنی آدھی آستین یا بنیان پہن کر نماز پڑھتا ہے تو کراہت تنزیہی ہے اور کپڑے موجود نہیں تو کراہت بھی نہیں معاف ہے اگر کرتے یا اچکن آستین چڑھا کر نماز پڑھتا ہے تو نماز مکروہ تحریمی ہے جیسا کہ درالمختار میں ہے کہ وکرہ کفہ ای رفعہ ولو لتراب کمشر کم او ذیل وصلاہۃ فی شیاب بنلتہ یلبسھا فی بیت ومنھنتہ ای خدمتہ ان لہ غیرھا والا لا(فتاویٰ امجدیہ حصہ 1 صفحہ 193)

               واللہ تعالیٰ اعلم باالــــــصـــــواب

کتبـــــــــــــــــــــــــہ ناچیز محمد شفیق رضا رضوی خطیب و امام سنّی جامع مسجد حضرت منصور شاہ رحمۃ اللہ علیہ بس اسٹاپ کشن پور الھند

ایک تبصرہ شائع کریں

1 تبصرے

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ