4.06.2020

کیا شعبان المعظم میں نامہ اعمال خدا کے رو بروپیش کئے جاتے ہیں


               اَلسَلامُ عَلَيْكُم وَرَحْمَةُ اَللهِ وبرکاتہ 

حضرت شعبان میں لوگوں کے ‌نامۂ اعمال رب کی بارگاہ میں پیش کئے جاتےہیں تو کیا حضرت اس کی کوئی دلیل ہے قرآن وحدیث میں حضرت جواب عنایت فرمادیں

            سائل محمد نسیم احمد نواب گنج
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
            وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

                  الجواب بعون الملك الوھاب

بیہقی میں ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللّٰہ عنہا سے مروی ہے حضور صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے فرمایا اے عائشہ تمہیں معلوم ہے اس رات میں کیا ہوتا ہے۔
فيها ان يكتب كل مولود من بنى آدم فى هذه السنة وفيها ان يكتب كل هالك من بنى آدم فى هذه السنة وفيها ترفع اعمالهم وفيها تنزل ارزاقهم.جو بچہ اس سال میں پیدا ہوتا ہے وہ اس رات میں لکھا جاتا ہے اور اس سال جو آدمی ہلاک ہونے والا ہوتا ہے اس کا نام بھی لکھا جاتا ہے اور اس رات میں ان کے اعمال اٹھائے جاتے ہیں اور اسی رات ان کے رزق اترتے ہیں۔(بارہ تقریریں۔صفحہ نمبر 227) مؤلف مولانا شریف نوری

محمد الطاف حسین قادری خادم التدریس دارالعلوم غوث الورٰی ڈانگا لکھیم پور کھیری یوپی الھند
 موبائیل فون/9454675382

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only