4.04.2020

کاجل لگانا کس کی سنت ہے؟؟

             السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

کیا فرماتے ہیں علمائے کرام ومفتیان عظام اس مسئلہ کے بارے میں کہ  سرمہ لگانانبی کی سنت ہے اور کاجل لگانا کس کی سنت ہے؟ جواب عنایت فرمائیں

                 عبدالسلام معینی اجمیری
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
           وعلیکم السلام ورحمة الله وبركاته 

                الجواب بعون الملک الوہاب

سرمہ لگانا حضور نبئ اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی سنت ہے اکثر احادیث سے ثابت ہے مگر کاجل کے بارے میں کوئی روایت میری نظر سے نہ گزری کی یہ کس کی سنت ہے پتھر کا سرمہ استعمال کرنے میں حرج نہیں اور سیاہ سرمہ یا کاجل بقصدِ زینت مرد کو لگانا مکروہ ہے اور زینت مقصود نہ ہو تو کراہت نہیں ۔(عالمگیری)حدیث شریف میں ہےرواہ ترمزی عن ابن عباس رضی اللہ عنہ٬ النبی صلی اللہ علیہ وسلم قال : الکتحلو بالاثمد فانہ یجلو البصر وینبت الشعر وزعم النبی صلی اللہ علیہ وسلم کانت لہ مکحلة یکتحل بھا کل ليلة ثلاثة فی ھذہ وثلاثة فی ھذہ تر جمہ ترمذی نے ابن عباس رضی اللّٰہ تعالٰی عنہماسے روایت کی، نبی صلَّی اللّٰہ تعالٰی علیہ وسلَّم نے فرمایاکہ ’’اثمد پتھر کا سرمہ لگاؤ کہ وہ نگاہ کو جِلا دیتا ہے اور پلک کے بال اگاتا ہے۔‘‘ اور حضور (صلَّی اللّٰہ تعالٰی علیہ واٰلہٖ وسلَّم) کے یہاں سرمہ دانی تھی، جس سے ہر شب میں سرمہ لگاتے تھے تین سلائیاں اس آنکھ میں اور تین اس میں ۔سنن الترمذي‘‘،کتاب اللباس،باب ماجاء في الإکتحال،الحدیث:۱۷۶۳،ج۳،ص۲۹۳ایسا ہی بہار شریعت حصہ ۱۶ زینت کے بیان میں ہے 

                  واللہ اعلم باالصواب

کتبــــــــــــــــــــــــــہ محمـــد معصـوم رضا نوری عفی عنہ
منگلور کرناٹک انڈی(ا۸ شعبان المعظم ١٤٤١؁ھ_) 

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only