4.15.2020

کیا ایک شخص دو جگہ اذان دے سکتا ہے؟؟؟

           الســـلام علیکم و رحمۃ اللہ وبرکاتہ

کیا فرماتے ہیں علماء کرام کہ زید جو کہ مؤذن ہے ایک مسجد میں اذان دینے کے بعد دوسری مسجد یا کسی ایسی جگہ جہاں فرضی طور پانچ وقت کی نماز ادا کی جاتی ہے وہاں کے لیے اذان دینا کیسا ہے؟

               سائل محمد فرقان خان
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
          وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

            الجوابـــــ بعون الملکـــــ الوھاب

ایک مؤذن کو دو جگہ اذان دینا مسجد اول میں نماز پڑھنے کے بعد مسجد ثانی میں اسی مؤذن کا اذان دینا مکروہ ہے جیسا کہ درالمختار میں ہے ویکرہ لہ أن یؤذن فی مسجدین (درالمختار جلد 1 صفحہ نمبر 268) اگر دوسری مسجد میں کوئی مؤذن نہ ہو تو یہی مؤذن وہاں بھی آذان دے سکتا ہے 

                واللّٰہ ورسولہ اعلم باالصواب

کتبہ ناچیز محمد شفیق رضا رضوی خطیب و امام سنّی مسجد حضرت منصور شاہ رحمت اللہ علیہ بس اسٹاپ کشن پور الھند

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only