کیا نابالغ بچی سے زنا کرنے والے کا نکاح ٹوٹ جاتا ہے؟؟؟


             السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ اگر کسی نے نا بالغ لڑکا یا لڑکی کے ساتھ زنا کیا ہا لواطت کیا تو اس کا نکاح ٹوٹ جائے گا؟جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی

                  سائل محمد مقیم رضا
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
           وعلیکم السلام ورحمۃاللہ وبرکاتہ 

               الجواب بعون الملک الوھاب 

 نابالغ لڑکی کے ساتھ زنا کرنے یا کسی لڑکے کے ساتھ لواطت کرنے سے نکاح نہیں ٹوٹتا البتہ وہ گناہ کبیرہ کا مرتکب ہے اگر اسلامی حکومت ہوتی تو حد زنا و لواطت نافذ ہوتا مگر یہاں اسلامی حکومت نہیں ہے اس لیۓ یہ حکم نافذ نہ ہو گا بلکہ ایسے شخص پر علانیہ توبہ استغفار لازم ہے اور اس سے احکام شرع کی پابندی کا عہد لیا جائے اور قبول توبہ کے لئے میلاد وقرآن خوانی کا اہتمام کرے غرباء ومساکین کو کھانا کھلاۓ کیونکہ یہ توبہ کے قبول ہونے میں معاون ہوتی ہیں اللہ تعالیٰ ارشاد فرماتا ہے وَ مَنْ     تَابَ     وَ عَمِلَ صَالِحًا فَاِنَّهٗ  یَتُوْبُ  اِلَى اللّٰهِ مَتَابًاسورہ فرقان آیت ۷۱ الماخوذ فتاوی فقیہ ملت جلد دوم صفحہ ١٠٢

                   واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب 

       کتبہ محمد عمران القادری التنویری غفرلہ

ایک تبصرہ شائع کریں

3 تبصرے

  1. میں گروپ میں شامل نہیں ہوپارہاہوں

    جواب دیںحذف کریں
    جوابات
    1. اَلسَّــلَامْ عَلَیْڪُمْ وَرَحْمَةُ اللہِ وَبَرَڪَاتُہْ
      آپ اس نمبر پر رابطہ کریں 7052569971

      حذف کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ