کن وقتوں میں نماز جنازہ پڑھنا جائز نہیں؟؟؟


              السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

کیا فرماتے ہیں علمائے کرام ومفتیان عظام اس مسئلہ کے بارے میں کہ کن وقتوں میں نماز جنازہ پڑھنا جائز نہیں۔ جواب عنایت فرمائیں شکریہ کا موقع دیں 

     سائل حبیب الرحمن سنت کبیر نگر یو پی
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
          وعلیکم السلام ورحمة الله وبركاته

               الجواب بعون الملک الوھاب

جنازہ اگر مکروہ وقت میں لایا گیا تو اسی وقت پڑھنا جائز ہے- اور اگر پہلے سے لاکررکھا ہوا تھا کہ وقت مکروہ آگیا تو اب جائز نہیں یہاں تک کہ وقت مکروہ گزر جائےفتاوی ہندیہ میں ہےاذا وجیت صلاۃ الجنازۃ وسجدۃ التلاوۃ فی وقت مباح واخرتا الیٰ ھٰذاالوقت فانہ لایجوز قطعاأ مالو وجیتا فی ھٰذاالوقت وادیتا فیہ جاز لانھأ ادیت ناقصۃ کما وجیت کذا فی السراج الوھاج اھ(ج 1, ص 52)اور حضور صدر الشریعہ علیہ الرحمہ فرماتے کہ جنازہ اگر اوقات ممنوعہ میں لایا گیا تو اسی وقت پڑھیں کوئی کراہت نہیں_ کراہت اس صورت میں ہے کہ پیشتر سے تیار موجود ہے اور تاخیر کی یہاں تک کہ وقت کراہت آگیا" بہار شریعت حصہ 3 صفحہ 21)(بحوالہ فتایٰ مرکز تربیت افتاء جلد اول 331 کتاب الجنائز ){مطبع فقیہ ملت اکیڈمی اوجھا گنج بستی}

                  واللہ تعالی اعلم بالصواب 

کتبــــــــــــہمحمـــد معصـوم رضا نوری عفی عنہ منگلور کرناٹک انڈیا۲۱/ رمضان المبارک ۱۴۴۱؁ ہجری ۱۵/ مئی ۰۲۰۲؁ عیسوی بروز جمعہ مبارکہ

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے