جو قصداً نماز چھوڑے اس کے پیچھے نماز پڑھنا کیسا ہے ؟؟؟

           
 
               السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

کیا فرماتے ہیں علمائے کرام جوایک وقت کی نماز قصداً چھوڑ د ے اس کے پیچھے نماز پڑھنا کیسا ہے حوالہ کے ساتھ جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی 

        سائل محمد عباس اشرفی کچھوچھہ شریف
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
              وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

                 الجوابـــــ بعون الملکـــــ الوھاب 

نماز روزہ حج زکوٰۃ فرائض قطعیہ ہیں, جو ان میں سے کسی آیت کی فرضیت سے انکار کرے, کافر ہے' اور اگر فرض جانتا ہے مگر ادا نہیں کرتا تو فاسق وفاجر ہے، مگر اسلام سے خارج نہیں- اور بہار شریعت میں ہے کہ جو شخص بلا عزر شرعی ایک وقت کی بھی نماز قصداً چھوڑے وہ فاسق ہے. اور فاسق کے پیچھے نماز جائز نہیں ہے. (بہارے شریعت نماز کا بیان)[فتاویٰ امجدیہ جلد چہارم صفحہ نمبر 430]

                     واللہ اعلم بالصواب

           کتبہ العبد محمد عمران شاغر الحشمتی 

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے