خطبہ جمعہ میں کس طرح بیٹھنا چاہیئے

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

سوال۔۔۔. یہ ہے کہ دوران خطبہ جمعہ کس حالت میں بیٹھ نا چاہئے زید کہتا ہے پہلے خطبے میں نماز کی طرح ہاتھ باندھ کر دوسرے خطبے میں حالتِ قاعدہ کی طرح اور بکر کا کہنا ہے یہ کوئی ضروری نہیں تو کیا ہے فقہی مسائل حوالے عنایت فرمائیں کرم نوازی ہوگی

سائل ۔۔ گم نام
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

الجواب بعون الملک الوہاب الھم ھدایت الحق والصواب

حضور صدرالشریعہ علیہ الرحمہ تحریرفرماتےہیں کہ خطبہ سننے کی حالت میں دوزانوں بیٹھے جیسے نمازمیں بیٹھتےہیں عالمگیری درمختار غنیہ ( بہارشریعت حصہ چہارم صفحہ ۷۷۱ ) دوران خطبہ دوزانوں بیٹھنامستحب ہے مراۃ المناجیح میں مفتی احمدیار خان نعیمی علیہ الرحمہ نےبیان فرمایاہے کہ جیسے چاہیں بیٹھیں( حوالہ فتاوی اکرمی صفحہ ۱۶۰ ) لہذا ا زید و بکر دونوں کاکہنادرست ہے اور بہتر بھی یہی ہے کہ دوزانوں بیٹھ کرخطبہ سناجائے کہ مستحب ہے


واللہ اعلم ورسولہ باالصواب 

کتــــــــــــــــــــــبہ غیاث الدین قادری دارالعلوم شھیداعظم دولہاپور گونڈہ

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے