11.25.2020

کیا سالی سے زنا کرنے سے بیوی حرام ہو جاتی ہے

 السلام علیکم ورحمة اللہ وبرکاتہ 

کیا فرماتے ہیں علماء کرام مسٔلہ ذیل کے میں کہ بکر اپنی زوجہ کی سگی بہن سے زنا کیا قصداً تو اس صورت میں کیا بکر کی عورت حلال ہے یا حرام ہو گئ سوال کا جواب دے کر شکریہ کا موقع دے 

سائل محمد رمضان احمد لکھنؤ شہر یوپی انڈیا

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

الجواب بعون الملک الوھاب 

زوجہ کی سگی بہن سے زنا کرنے کی وجہ سے عورت حرام نہیں ہوتی ہے نا ہی نکاح ٹوٹتا ہےجیساکہ اعلحضرت امام احمد رضاخان فاضل بریلوی علیہ الرحمہ تحریر فرماتے ہیں ۔کہ سالی سے زنا عورت کو حرام نہیں کرتا ۔(فتاوی رضویہ جلد پنجم صفحہ ۱٦٨) لیکن بکر اور اس کی سالی زنا کے سبب سخت گنہگار ہوئے اگر حکومت اسلامیہ ہوتی تو ان دونوں کو بہت کڑی سزا دی جاتی ۔ موجود ہ صورت میں حکم یہ ہے کہ ان دونوں کو علانیہ توبہ واستغفار کرایا جائے  ان سے نماز کی پابندی کا عہد لیا جائے ان کو قرآن خوانی ومیلاد شریف کرنے غرباء ومساکین کو کھانا کھلانے اور مسجد میں چٹائی دینے اور نل لگوانے کی تلقین کی جائے کہ نیکیاں قبول توبہ میں معاون ہوتی ہیں خدائے تعالی کا ارشاد ہے۔ وَمَن تَابَ وَعَمِلَ صَالِحًا فَإِنَّهُ يَتُوبُ إِلَى اللَّهِ مَتَابًا(پ ۱۹ رکوع ٤)کوئی مالی جرمانہ ان پر نہیں لگایا جاسکتا ۔لان التعزیر بالمال منسوخ والعمل علی المنسوخ حرام البتہ پنچ انہیں کچھ جسمانی سزادے سکتا ہے(بحوالہ فتاوی فقیہ ملت جلد دوم صفحہ ۱۰۲/ شبیر برادرز لاہور ) 

واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب

کتبہ فقیر محمـد مـــعــصوم رضـــا نوریؔ عفی عنہ۳ ربیع الثانی ٢٤٤١؁ھ

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only