1.11.2021

مسلمان نے جانور ذبح اور کافر نے کھال اتاری تو اسکا کھانا کیساہے



السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

آپ حضرات کی بارگاہ میں سوال عرض ہے کہ مسلمان جانور ذبح کیا اور اس کی موجودگی میں کافر قصائ نے کھال اتاری اور بوٹی بنائ تو اس کا کھانا کیسا ہے


المستفتی ... مبارک حسین 

ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ

وَعَلَيْكُم السَّلَام وَرَحْمَةُ اَللهِ وَبَرَكاتُهُ‎

الجواب بعون اللھم ھدایۃ الحق والصواب 

صورت مسٶلہ میں جانور حلال ہےبشرطیکہ وہ گوشت مسلمان کی نظر سے اوجھل نہ ہواہوحضور صدرالشریعہ رحمةاللہ تعالیٰ علیہ تحریر فرماتے ہیں مسلمان نے جانور ذبح کر دیا اس کے بعد مشرک نے اس پرچھری پھیری تو جانور حرام نہ ہوا کہ زبح تو پہلے ہی ہوچکا ہے بہارشریعت حصہ١٥ ص٣١٦(مکتبہ مدینہ دھلی)خلاصہ مسلمان کے ذبح کرنے کے بعد مسلمان کےسامنے خواہ کوئی بھی کافر و مشرک اس کی کھال اتاردے یا کوئی بوٹی بنا دے جانور حلال ہی رہے گا


واللہ اعلم الصواب  

کتبہ عبیداللہ رضوی بریلوی خادم التدریس مدرسہ دارارقم محمدیہ میرگنج بریلی شریف 

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only