کیا ولی غلطی کر سکتے ہیں ایسا کہنا کیسا

Gumbade AalaHazrat

سوال
  کیا فرماتے ہیں علمائے کرام ومفتیان عظام اس مسئلہ کے بارے میں کہ کیا کسی ولی کے بارے میں یہ کہنا کہ وہ غلطی کر سکتے ہیں ایسا کہنا کیسا برائے مہربانی مکمل طور پر جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی المستفتی محمد صادق رضا اوجین ایم پی

       جواب

ولی غلطی کرسکتے ہیں ایسا کہنے والے پر کوئی حکم نہیں لیکن ایسا نہیں کہنا چاہئے یہ الگ بات ہے کہ ولی سے غلطی نہیں ہوتی ہے اور ہو جائے تو محال بھی نہیں۔ اور اگر کوئی یہ کہے کہ ولی سے غلطی ہو ہی نہیں سکتی یعنی گناہ - تو ایسا شخص گمراہ ہے۔ کیونکہ معصوم صرف انبیاء کرام اور ملائکہ کے ساتھ خاص ہے ان کے علاؤہ کوئی معصوم نہیں۔ بہار شریعت میں ہے: عصمت نبی اور مَلَک کا خاصہ ہے، کہ نبی اور فرشتہ کے سوا کوئی معصوم نہیں۔ اماموں کو انبیا کی طرح معصوم سمجھنا گمراہی و بد دینی ہے۔ عصمتِ انبیا کے یہ معنیٰ ہیں کہ اُن کے لیے حفظِ الٰہی کا وعدہ ہولیا، جس کے سبب اُن سے صدورِ گناہ شرعاً محال ہے بخلاف ائمہ و اکابر اولیا، کہ اللہ عَزَّوَجَلَّ اُنھیں محفوظ رکھتا ہے، اُن سے گناہ ہوتا نہیں، مگر ہو تو شرعاً محال بھی نہیں (بہار شریعت،ج1،ح1 ص39) واللہ ورسولہ اعلم بالصواب 

کتبہ فقیر محمد اشفاق عطاری

نیپال الھند /بروز اتوار

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے