کتنے منافقوں کو مسجد نبوی سے نکالا گیا تھا

       




              السلام علیکم ورحمتہ اللّٰہ برکاتہ

 علماء کرام کے بارگاہ میں عریضہ ہے کہ سرکار دوعالم صلی اللہ علیہ وسلم مسجد نبوی سے کن لوگوں کو ہاتھ پکڑ کر مسجد نبوی سے باہر نکالے تھے اور کیوں نکالے تھے اس کا حوالے کے جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی

     سائل حافظ اعجاز احمد نظامی گورکھپور


         وعلیکم۔السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

            الجواب بعون الملک الوھاب 

سرکارصلی اللہ علیہ وسلم کےپیچھےکچھ لوگ ایسےبھی نماز پڑھتےتھے جن کےاندرنفاق تھاجب سرکار صلی اللہ علیہ وسلم غیب کی خبربتاتےتووہ کہتےدیکھومحمد (صلی اللہ علیہ وسلم) غیب کی خبردیتےہےوہ لوگ مذاق اڑاتےتھے پھر
ایک دن سرکار صلی اللہ علیہ وسلم نےفرمایاجتنے بھی منافق میری مسجدمیں نمازپڑھنےآتےہیں سب نکل جاؤ ورنہ میں ایک ایک کانام لیکرنکالوں جب کوئی نہیں اٹھا توسرکار نے فرمایافلاں نکل جافلاں نکل سرکارصلی اللہ علیہ وسلم نے جن منافقوں کونکالاتھا ان کی تعداد 36تھی ہاتھ پکڑکرسرکار صلی اللہ علیہ وسلم نے کسی کونہیں نکالاالبتہ نام لےلےکرضرورنکالا

جیساکہ سرکاراعلیٰ حضرت عظیم البرکت فاضل بریلوی ربہ القوی نےابناءالحہ صفحہ 152پرتحریرفرمایاہے

واخرج ابن مردویہ عن ابن مسعودالانصاری رضی اللہ تعالیٰ عنہ قال لقدخطبناالنبی صلی اللہ علیہ وسلم خطبہ ماشھدت مثلھافقال ایھاالناس ان منکم منافقین فمن سمیتہ فلیقم قم یافلاں قم یافلاں حتی قام ستہ وثلاثون رجلا

ترجمہ 
یعنی ابن مردویہ نےبروایت ابومسعودرضی اللہ عنہ بیان کیاانہوں نےکہاوعظ فرمایانبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نےایساوعظ کہ ویساوعظ میں نےکبھی نہیں سناتوفرمایا۔اےلوگوبیشک تم میں بعض لوگ منافق ہیں تومیں جس کانام لوں اس کواٹھناپڑےگااچھااٹھ اےفلاں اچھااٹھ اےفلاں اس طرح باربار حکم دیتےرہےیہاں تک چھتیس منافق مجمع سےاٹھ گئے

بحوالہ فتاوی فیض الرسول جلددوم صفحہ 572

جب سرکارصلی اللہ علیہ وسلم نےان پلیدوں غلیظوں گندوں ناپاکوں کونام لیکرمسجدسےنکال دیا ان کی کلمہ گوئی اورمسلمانی حیلہ شکل وصورت کونہ دیکھاان کےریاکارانہ اعمال کونہ دیکھابلکہ ان کےگندےعقائدکودیکھا اوران کےگندےعقائدکی بناپرمسجدسےباہرفرمایا

                    واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب

                     محمدافسررضاحشمتی

                 اســـلامی مـــعلــومـات گـــــروپ 

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے