لاؤڈ-اسپیکر کی آذان کا جواب دینا کیسا ہے



        السلام علیکم ورحمتہ الله وبرکاتہ

سوال.. کیا فرماتے ہیں علماء کرام و مفتیان عظام اس مسئلہ میں کہ لاوڈسپیکر میں آذان کی آواز سن کراس کا جواب دینا واجب ہے یا نہیں اس لئے کہ اس کی آواز اصل نہیں ہے جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی ہمیں شکر ادا کرنے کا موقع دے

      المستفتی محمد مقیم رضا از بریلی شریف

    و علیکم السلام و رحمۃ اللہ تعالیٰ و برکاتہ

📚الجواب بعون الملک الوہاب اللہم ھدایت الحق والصواب

صورت مسؤلہ میں علمائےمحققین کےنزدیک یہ اختلاف ہیں کہ لاؤڈاسپیکرکی آواذ بعینہ متکلم کی آوازہےیانہیں
بعض علماءبعینہ متکلم کی آوازمانتےہیں اوربعض نہیں مانتےتواگرلاؤڈاسپیکرسےاذان ہواورلاؤڈاسپیکرکی آوازمتکلم کی آوازنہ مانیں توخاموش رہنےاورجواب دینےکےبارےمیں وہ حکم نہ ہوگاجواذان کی اصل آوازپرہےاوراگرمتکلم ہی کی آوازمانیں توپھروہی حکم ہوگاجواذان کی اصل آوازپرہےکہ جب اذان ہوتواتنی دیرسلام وکلام اورجواب سلام تمام کام کاج چھوڑدیاجائےاوراذان کوغورسےسناجائےاوراذان کاجواب دیاجائےکہ جواذان کےوقت باتوں میں مشغول رہتاہےاس پرمعاذاللہ خاتمہ براہونےکااندیشہ ہےاوراحتیاط بھی یہی ہےکہ اذان کےوقت خاموش رہیں خواہ لاؤڈاسپیکرسےاذان ہویابغیرلاؤڈاسپیکرکے

(📗فتاوی مرکزتربیت) 
(📕افتاءجلداول صفحہ 159باب الاذان)

        واللہ تعــالیٰ اعـــلم بــاالصــواب


             شـــــرف قلــــــم
حــضـــرت عـــلامــہ و مـــولانــا محمــــــــد افـســـــر رضـــا حشمتـی سعـدی عفـی عنـــہ صـاحـب قبـلـہ 
   بتاریخ:(05)دسمبر : بروز جمعرات(2019)

(اســـــلامــی مـــــعــــلـومـــات گـــــروپ)

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے