3.30.2020

عورت کو جوڑا باندھ کر نماز ادا کرنا از روئے شرع کیســـاھے


               السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ 

کیا فرماتے ہیں علماٸے کرام و مفتیان کرام اس مسٸلہ کے بارے میں کہ بالوں میں جوڑا باندھ کر نماز پڑھنا کیسا برائے مہربانی مکمل طور پر جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی 

              الســــاٸل محمد شاکر رضا آگرا
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
            وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 
                الجواب بعون الملک الوہاب

عورتوں کوجوڑاباندھ کرنمازپڑھنا درست ہے سرکار صلی اللہ علیہ وسلم نے مردوں کوجوڑاباندھنےسےمنع فرمایاہےناکہ عورتوں کوحدیث شریف میں ہےانہ علیہ السلام نھی ان یصلی الرجل وھومعقوص ھدایہ اولین صفحہ140کتاب الصلوۃحدیث وفقہ میں جہاں منع ہےوہاں مذکرکی ضمیرلائی گئی ہےجس سےثابت ہوتاہے کہ عورت کوجوڑاباندھ کرنمازپڑھنی جائزہے(فتاوی اکرمی جلداول صفحہ 129 

                    واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب

کتبـــــــــــــــــــــــــہ محمدافسررضاحشمتی سعدی عفی عنہ 

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

Whatsapp Button works on Mobile Device only