4.15.2020

روزے کی حالت میں بیوی کو بوسہ دینا کیسا ہے

              السلام علیکم و رحمۃ اللہ وبرکاتہ.

کیا فرماتے ہیں علماء کرام و مفتیان عظام اس مسئلہ کے بارے میں کہ روزے کی حالت میں اپنی بیوی کو بوسہ دے دیا تو کیا حکم ہے برائے مہربانی جواب عنایت فرمائیں عین نوازش ہوگی.

         سائل : محمد شاکر رضوی جہاں آباد
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
            -وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ  

               الجواب بعون الملک الوہاب 

صورت مذکورہ میں روزہ نہیں ٹوٹیگا اگرچہ مرد کو انزال ہوجائے مگر مکروہ ہے لیکن اگر مرد نے عورت کا بوسہ لیا یا چھوا یا مباشرت کی یا گلے لگایا اور انزال ہوگیا تو روزہ جاتا رہا - جیساکہ حضور صدر الشریعہ بدر الطریقہ علیہ الرحمۃ والرضوان بہار شریعت میں تحریر فرماتے ہیں کہ " عورت کا بوسہ لیا یا چھوا یا مباشرت کی یا گلے لگایا اور انزال ہوگیا تو روزہ جاتا رہا اور عورت نے مرد کو چھوا اور مرد کو انزال ہوگیا تو روزہ نہ گیا عورت کو کپڑے کے اوپر سے چھوا اور کپڑا اتنا دبیز یعنی موٹا ہے کہ بدن کی گرمی محسوس نہیں ہوتی تو فاسد نہ ہوا اگرچہ انزال ہوگیا "اھ( ح:5/ص:988/ روزہ توڑنے والی چیزوں کا بیان / مجلس المدینۃ العلمیۃ دعوت اسلامی) اور فتاوی ھندیہ میں ہے کہ " ولو مس المرأۃ و رأی ثیابھا فأمنی فان وجد حرارۃ جلدھا فسد و الا فلا کذا فی معراج الدرایۃ ولو مست المرأۃ زوجھا حتی انزل لم یفسد صومہ ولو کان یکلف بذالک ففیہ اختلاف المشائخ کذا فی المحیط " اھ اور اسی میں ہے کہ " والمس والمباشرۃ والمصافحۃ والمعانقۃ کالقبلۃ کذا فی البحر الرائق " اھ( ج:1/ص:304/305/ الباب الرابع فیما یفسد وما لا یفسد / بیروت)

                واللہ تعالیٰ اعلم باالصواب 

کتبہ اسرار احمد نوری بریلوی خادم التدریس والافتاء مدرسہ عربیہ اہل سنت فیض العلوم کالا ڈھونگی ضلع نینی تال اتراکھنڈ

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only