غسل فرض ہونے کے بعد فوراً غسل کرنا کیسا ہے


                 السلام علیکم ورحمتہ اللہ و برکاتہ 

حضور غسل فرض ہونے کے بعد فورا کرنا جلدی جلد جواب عنایت فرماے

  سائل محمد فیضان رضا قادری پتہ حبیب پور الھند 
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
        وعلیکم السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ 

              الجواب اللھم ھدایۃ الحق والصواب 

حدیث شریف میں ہے کہ پاکیزگی آدھا ایمان ہے جیساکہ صحیح مسلم شریف کے اندرحضرت ابو مالک اشعری سے روایت ہے عن ابی مالک الاشعری قال قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم الطھور شطرالایمان(مسلم شریف) ترجمہ حضرت ابو مالک اشعری رضی اللہ تعالی عنہ روایت کرتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ پاکیزگی آدھا ایمان ہے حوالہ؛ انوار الحدیث کتاب الطہارہ صفحہ ۹۸ احکام فقہ میں ہے کہ جب غسل واجب ہو تو فورا غسل کرلینابہترہے اور تاخیر کرتا ہے کہ اس تاخیر میں نماز قضاء کردی تو اس نے گناہ کیاحوالہ بہار شریعت حصہ دوم کتاب الطہارہ صفحہ ۳۲۶خلاصہ مذکورہ عبارت سے واضح ہے کہ جب بھی غسل فرض ہو فورا غسل کرکے اپنےایمان کی اور نماز کی حفاظت کرے

                واللہ تعالیٰ اعلم بـاالـــــــصـــــــــواب 

فقط محمد نعیم خان القادری خطیب و امام جامع مسجد نیسری کولھا پور مہاراشٹر

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے