7.06.2020

الف باتا پڑھنا چاہئے یا الف بے تے؟


                   السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

مسئلہ:۔ کیا فرما تے ہیں علمائے کرام اس بارے میں کہ الف با تا پڑھنا صحیح ہے؟ جیسا کہ آج ہر جگہ پڑھایا جارہا ہے کہ الف بے تے ؟اگر الف با تا صحیح ہے تو لوگ پہلے سے الف بے تے پڑھے ہیں اور اور جو پڑھا رہے ہیں تو ان کیلئے کیا حکم ہے؟ اور اگر دونوں صحیح ہے کس پر عمل کیا جائے ؟بینوا تو جروا 

      المستفتی:۔ محمد آفتاب عالم برکاتی امبیڈکرنگر
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
                وعلیکم السلام و رحمۃ اللہ وبرکاتہ

                  الجــــــــوابــــــــــ بعون الملک الوہاب

حرف مفردات کا صحیح تلفظ الف ،باب،تا،ثا،جیم ،حا،خا وغیرہ ہے لہذا بچوں کو اسی طرح پڑحانا چا ہئے، اور جو لوگ الف بے تے ثے وغیرہ پڑھاتے ہیں وہ طریقہ غلط ہے انکو چا ہئے کہ الف باتا پڑھیں اور بچوں کو بھی اسی طرح پڑھا ئیں چونکہ قرآن شریف پڑھتے وقت تلفظ صحیح طریقے سے ادا ہو جا تا ہے البتہ حرف مفردات میں غلط پڑھتے ہیں اس لئے گنہگار نہ ہونگے۔

                       واللہ تعا لیٰ اعلم باالصواب 

کتبہ  فقیر تاج محمد قادری واحدی ۱۳؍ ذی القعدہ ۱۴۴۱؁ھ   ۵؍ جولا ئی ۲۰۲۰؁ء بروز اتوار

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only