7.17.2020

باپ نے بیٹی سے زنا کیا تو اس کانکاح بی بی سے باقی رہا یا نہیں

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

علمائے کرام و مفتیان عظام کی بارگاہ میں سوال عرض ہے کہ اگر باپ نے بیٹی سےزناکیاتواس کانکاح بی بی سےرہایانہیں جواب عنایت فرمائیں حوالہ کے ساتھ بہت مہربانی ہوگی

سائل محمد شاکر رضوی جہاں آباد یو پی 
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

الجواب بعون الملک الوہاب الھم ھدایت الحق والصواب

‏جس نے اپنے بیٹی سے زناکیا وہ بدکار سیاہ کار ومستحق غضب جبار اورسزاوارنار ہے اگراسلامی حکومت ہوتی تواس کوسنگسار کردیاجاتااب جب کہ یہاں اسلامی حکومت نہیں ہے تواب اس پرلازم ہے کی توبہ استغفارکرے اورراہ خدامیں صدقات وخیرات کرےیہ چیزیں توبہ قبول ہونےمیں معاون ہوں گی قال اللہ تعالی ومن تاب وعمل صالحا فانہ یتوب الی اللہ متابا اگروہ انسان توبہ استغفار نہ کرے تومسلمان اس کابائکاٹ کردیں قال اللہ (واماینسینک الشیطان فلاتقعدبعدالذکری مع القوم الظلمین) اب اسکی بیوی اس پرحرام ہوگئ فورا اس سے جدا ہوجائے قال النبی صلی اللی تعالی علیہ وسلم یحرم من الرضاعۃ مایحرم من الولادۃ (ماخوذ فتاوی علیمیہ جلددوم صفحہ ۲۳۰) 

واللہ اعلم بالصواب 

کتبہ غیاث الدین قادری دارالعلوم شھیداعظم دولہاپور گونڈہ

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only