ایصال ثواب کے لئے فاتحہ گھر میں پڑھے یا قبرستان میں

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ 

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ کے بارے میں کہ ایصال ثواب یعنی فاتحہ پڑھنا ہو تو گھر پر پڑھنا بہتر ہے یا قبرستان جا کر پڑھنا بہتر ہے۔مدلل جواب عنایت فرمائیں مہربانی ہوگی

سائل۔ بدر عالم پریہار سیتامڑھی بہار شریف
ــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

الجواب بعون الملک الوھاب 

گھر پر بھی ایصال ثواب کر سکتے ہیں یعنی فاتحہ پڑھ سکتے ہیں لیکن بہتر ہے کہ قبرستان میں جاکر فاتحہ خوانی کرے۔ جیسا فتاوی رضویہ شریف میں ہے قبرستان میں جاکے پڑھنے میں زیادہ ثواب ہے کہ زیارتِ قبور بھی سنت ہے او روہاں پڑھنے میں اموات کا دل بھی بہلتاہے۔ اور جہاں قرآن مجید پڑھا جائے رحمتِ الٰہی اترتی ہے۔ قبر اگر پختہ ہے اس پر پانی ڈالنا فضول وبے معنی ہے، یونہی اگر کچی ہے اور اس کی مٹی جمی ہوئی ہے۔ ہاں اگرکچی ہے اور مٹی منتشر ہے تو اس کے جم جانے کوپانی ڈالنے میں حرج نہیں، جیسا کہ ابتدائے دفن میں خود سنت ہے ((( حوالہ فتاوی رضویہ جلد 9 صفحہ نمبر 609 دعوت اسلامی )))

واللہ اعلم باالصواب

کتبہ العبد فقیر محمد اشفاق احمد عطاری 

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے