شک کی بنا پر سجدہ سہو کیا تو غیر مسبوق کی نماز ہوئی یا نہیں

Gumbade AalaHazrat

سوال
  کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس مسئلے میں کہ اگر امام شک کی بنیاد پر سجدہ سہو کر لیا تو جو غیر مسبوق ہیں انکی نماز ہوگئی لیکن جو مسبوق ہیں ان کی نماز نہ ہوئی کیا وجہ ہے جو مسبوق کی نماز نہ ہوئی مدلل جواب عنایت فرمائیں فقط والسلام رئیس احمد سبحانی بستوی یوپی

       جواب

مسبوق کی نماز اس لئے نہیں ہوئ کہ سجدہ سہو کے سلام کے بعد امام کے ساتھ نماز میں شریک ہونے سے نماز نہیں ہوگی " حضور اشرف الفقہا مفتی مجیب اشرف قادری علیہ الرحمہ فرماتے ہیں "کسی امام کو سہو نہیں ہوا تھا مگر بھول کر اس نے سجدہ سہو کرلیا تو امام اور ان مقتدیوں کی نماز ہوگئ جو شروع سے امام کے ساتھ رہے یا سجدہ سہو کے سلام پھیرنے سے پہلے شریک ہوئے مگر ان لوگوں کی نماز نہیں ہوگی جو سجدہ سہو کا سلام پھیرنے کے بعد امام کے ساتھ نماز میں شریک ہوئے خواہ یہ شرکت سجدہ میں ہو یا اس کے بعد قعدہ میں ہو بہر صورت ان کو نماز لوٹانی پڑے گی "اھ

(فتاویٰ رضویہ شریف ج 3 ص 365 ) مسائل سجدہ سہو ص 85 )
واللہ ورسولہ اعلم بالصواب 

کتبہ محمد ریحان رضا رضوی

فرحاباڑی ٹیڑھاگاچھ وایہ بہادر گنج ضلع کشن گنج بہار انڈیا

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے