10.23.2021

مہینے میں کتنے دن ہمسبتری کرنا مکروہ ہے؟

Gumbade AalaHazrat

سوال
  کیا فرماتے ہیں علمائے دین کہ مہینے میں کچھ ایام ایسے ہیں جس میں ہمبستری کرنا جائز نہیں عورت سے المستفی محمد ابراھیم رامپوری

       جواب

ہمسبتری کرنا کسی دن منع نہیں ہر دن ہمسبتری کرنا جائز ہے البتہ مہینے کے تین راتوں میں ہمبستری کرنا مکروہ ہے فقیہ العصر حجة الاسلام امام غزالی علیہ الرحمہ فرماتے ہیں مہینے کی تین راتوں میں یعنی پہلی ؛ آخری ؛ اور پندرہویں رات میں جماع کرنا مکروہ کہا جاتا ہے کہ ان راتوں میں جماع کے وقت شیطان موجود ہوتا ہے اور یہ بھی کہا جاتا ہے کہ ان راتوں میں شیطان جماع کرتے ہیں یہ کراہت حضرت علی المرتضیٰ حضرت معاویہ اور حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ تعالی عنھم سے مروی ہے نوٹ ) یاد رہے یہاں مہینے سے اسلامی مہینہ مراد ہے بعض علماء جمعة المبارک کی رات اور دن میں جماع کو اچھا سمجھتے ہیں اور یہ سرکار دو عالم صلی اللہ علیہ وسلم کے اس ارشاد گرامی کے ایک مفہوم کے اعتبار سے ہے آپ نے فرمایا رحم اللہ من غسل واغتسل اللہ تعالی اس شخص پر رحم فرمائے جو جمعة المبارک کے دن غسل کرے اور غسل کرائے اس حدیث کا ایک مفہوم یہ ہے کہ بیوی سے جماع کرے اس طرح یہ عمل عورت کے غسل کا باعث بن جائے گا (سنن ابن ماجہ احیاء العلوم جلد دوم صفحہ ۱۲۶ مطبوعہ غزنی اسٹریٹ اردو بازار لاہور) واللہ ورسولہ اعلم بالصواب 

کتبہ معصوم رضانوری عفی عنہ

منگلور کرناٹک انڈیا

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only