طلبہ کی غیر حاضری پر مالی جرمانہ عائد کر نا کیسا ہے

Gumbade AalaHazrat

سوال
  السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ علمائے کرام کی بارگاہ میں سوال ہے کہ اسکول اور کالجوں میں طلبہ سے غیر حاضری کے طور پر اور ہوم ورک وغیرہ نہ کرنے پر جرمانے کے طور پر رقم لینا کیسا ہے اور اس رقم کو اسکول کالج میں میں خرچ کرسکتے ہیں یا نہیں جب کہ اسکول اور کالج پرائیویٹ ہوتے ہیں اس رقم کو مالک رکھ سکتا ہے یا نہیں ازروئے شرع جواب عنایت فرماکر ذرہ نوازی کا موقع عنایت فرمائے المستفتی محمد آصف رضا ایم پی

       جواب

جن اسکول و کالج میں فری سہولیات مہیا نہیں وہاں لیٹ فیس تعزیر بالمال ہے جو ناجائز وممنوع ہے اور جہاں فری سہولیات مہیا ہیں وہاں پیسا لینا تعزیر بالمال نہیں بلکہ قیام وطعام کی سہولیات کا معاوضہ ہے کہ وہ مدرسہ یا کالج طالب علم کو جو فری سہولیات دے رہا ہے اس نے اس طالب علم کے لئے انکو چند دنوں کے لئے روک دیا ہے تاکہ وہ غیر حاضری وغیرہ سے باز آجاے اور محنت سے پڑھے واللہ ورسولہ اعلم بالصواب 

کتبہ شان محمدقادری مصباحی

4/اگست 2018ء

ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے