11.27.2022

کیا وہابیوں کے نکاح میں شامل ہونے والوں کے نکاح باطل ہو جاتے ہیں

Gumbade AalaHazrat

سوال
  السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلے میں کہ وہابی دیوبندی کے نماز جنازہ پڑھنے سےیا نکاح میں شرکت کرنے سے سب حاضر ہونے والوں کے نکاح باطل ہوجاتے ہیں رہنمائی فرمائیں المستفی مستفتی حاجی نفیس صاحب ایم پی

       جواب

وہابی دیوبندی کے جنازہ پڑھنے یا اس میں شرکت کرنے سے نکاح باطل نہیں ہوتا تاہم اس وہابی دیوبندی کو مسلمان نہ سمجھے ہاں اگر مسلمان سمجھ کر جنازے میں شرکت کیا تو نکاح باطل ہوگیا تجدید ایمان تجد نکاح سب کرے
فتاوی فیض الرسول میں ہے اگر لوگوں نے وہابی کے پیچھے اس کی وہابیت جانتے ہوئے مسلمان اعتقاد رکھ کر نماز جنازہ ادا کی تو کفر ہے علی الاعلان توبہ تجدید ایمان و نکاح ضروری ہے اور اگر وہابی امام کو مرتد و بدمذہب سمجھتے ہوئے پڑھی تو فسق ہے علانیہ توبہ لازم ہے یہی حکم وہابی یا صلح کلی کی نماز جنازہ پڑھنے کا ہے

(جلد اول صفحہ ٤٤١)
اور فتاویٰ بحر العلوم میں ہے اور اگر کسی سنی نے دیوبندی کی نماز جنازہ حرام سمجھ کر پڑھی تو وہ ایک حرام کا مرتکب گنہگار اور فاسق ہوا اور اگر دیوبندی کو مسلمان سمجھ پڑھا تو دائرہ اسلام سے خارج ہوا کی دیوبندی کو مسلمان سمجھ کر اس کی نماز جنازہ پڑھنا کفر ہے (جلد دوم صفحہ ۵۳ کتاب الجنائز)
نیز اسی میں ہے دیوبندیوں کے کفری عقیدہ پر مطلع ہوکر اور یہ جانتے ہوئے کی متوفی اور امام دونوں اسی عقیدے کے ہیں ۔ایسے آدمی کی نماز جنازہ اور ایسے امام کی اقتدا ناجائز و حرام ہے ایسی اقتداء کرنے والے اور ایسی نماز جنازہ پڑھنے والے پر توبہ و استغفار لازم ہے اور اگر سب کچھ جانتے ہوئے ان کو مسلمان سمجھا اور یہ سمجھ کر اقتدا کی یا نماز پڑھی تو ان کے ساتھ یہ بھی دائرہ اسلام سے خارج ہوا (فتاوی بحرالعلوم جلد دوم صفحہ ۵۸ کتاب الجنائز) واللہ ورسولہ اعلم بالصواب 

کتبہ محمد معصوم رضا نوریؔ ارشدی غفرلہ

۱ جمادی الاولیٰ ۱۴۴۴ ھجری ۲۶ نومبر ۲۰۲۲ عیسوی شنبہ

ایک تبصرہ شائع کریں

براۓ مہربانی کمینٹ سیکشن میں بحث و مباحثہ نہ کریں، پوسٹ میں کچھ کمی نظر آۓ تو اہل علم حضرات مطلع کریں جزاک اللہ

فـہـرسـت گـــــروپ مـنـتـظـمـیـن

...
رابـطـہ کــــریـں

Whatsapp Button works on Mobile Device only